Swiss letter saga: AG makes stunning revelations in SC

zardari1 480x238 Swiss letter saga: AG makes stunning revelations in SC

zardari and swiss court Swiss letter saga: AG makes stunning revelations in SC

zardari and swiss court Swiss letter saga: AG makes stunning revelations in SC

ISLAMABAD: Attorney General of Pakistan made some startling revelations about the infamous Swiss case in the Supreme Court.

The PPP-led government had written a letter to its lawyer in Geneva on November 22, last year, telling him to convey its stand to the Swiss authorities that the dormant graft cases against President Asif Ali Zardari should not be reopened.

One comment

  1. مری میں میاں نواز شریف کی ذاتی رہائش گاہ کو بھی وزیر اعظم ہائوس ڈکلیئر کر دیا گیا اور اس پر پچاس رینجرز تعینات کر دیے گئے ہیں‘ یہ حکومت کے ابتدائی پندرہ دنوں میں تیسرا وزیراعظم ہائوس ہے‘ ایک اسلام آباد میں‘ دوسرا لاہور اور تیسرا اب مری میں‘ آپ پندرہ دنوں میں ملک کے 65 سال کے مسئلے حل نہیں کر سکتے ہیں‘ نہ کریں لیکن آپ وزیر اعظم ہائوسز کی تعداد تو کم کر سکتے ہیں۔
    آپ وزیراعظم کی دونوں ذاتی رہائش گاہوں کو ذاتی رہنے دیں اور ان پر سرکار کا ایک پیسہ خرچ نہ ہونے دیں‘ امریکا سے لے کر ترکی تک دنیا کے کسی ترقی یافتہ یا ترقی پذیر ملک میں ذاتی رہائش گاہوں کو سرکاری حیثیت نہیں دی جاتی اور ذاتی دوروں یا چھٹیوں کے دوران صدور اور وزراء اعظم کا پروٹوکول بھی پچاس فیصد کم ہو جاتا ہے‘ آپ حکومت کے ابتدائی دس دنوں میں یہ تو کر سکتے ہیں‘ آپ یہ اعلان تو کر سکتے ہیں ملک میں وزیر کو بھی اتنی ہی سیکیورٹی ملے گی جتنی عام شہری کو نصیب ہوتی ہے‘ وزیراعظم خود کو ان لوگوں کے برابر تو کھڑا کر سکتا ہے یہ جن کے ووٹوں سے منتخب ہوتا ہے‘ اس کے لیے تو پانچ سال ضروری نہیں ہیں۔
    دوستو ! مجھے میاں صاحب سے بے جا نفرت ہے نہ ہی بے جا محبت – مجھے اپنی دال روٹی کی فکر ہے اگر میری دال روٹی بھی مہنگی ہو جائے اور ادھر وزیر اعظم ہائوسز کی تعداد بڑھ جائے تو دکھ تو ہونا ہے نا – آپ بھی نون لیگ کا جیالا ہو کر نہیں اک عام پاکستانی بن کر سوچیں تو یہ درد آپ کو بھی محسوس ہو گا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <strike> <strong>